حریت رہنما افضل گورو کا یوم شہادت، مقبوضہ کشمیر میں مکمل ہڑتال

مظفرآباد/ سری نگر/ اسلام آباد: حریت رہنما محمد افضل گورو کے چھٹے یومِ شہادت کے موقع پر مقبوضہ کشمیر میں مکمل ہڑتال ہے۔ آزاد و مقبوضہ کشمیرسمیت پوری دنیا میں مقیم کشمیری تحریک آزادی کےعظیم ہیرو ڈاکٹرمحمد افضل گورو کی چھٹی برسی عقیدت و احترام سے منا رہے ہیں۔

مقبوضہ کشمیر میں حریت رہنما محمد افضل گورو کی چھٹی برسی کے موقع پر مکمل ہڑتال ہے، وادی میں تجارتی وتعلیمی سرگرمیاں بند ہیں جب کہ قابض بھارتی فوج کی جانب سے حریت قیادت کو گھروں میں نظر بند کردیا گیا ہے اور اہم عمارتوں پر فوج تعینات ہے لیکن اس کے باوجود مقبوضہ کشمیر کے چھوٹے بڑے شہروں میں ریلیاں و مظاہرے کیے جارہے ہیں۔

حریت رہنما محمد یاسین ملک کی اہلیہ مشعال ملک نے اپنے ایک بیان میں افضل گورو کو زبردست خراج عقیدت پیش کیا ہے، ان کا کہنا ہے کہ افضل گورو کو سزائے موت دے کر عدالتی قتل کیا گیا، بھارت کشمیریوں کے خون کا پیاسا ہوا ہے،  لیکن بھارت کی حکومت اور غاصب بھارتی فوج کو پیغام دینا چاہتے ہیں کہ جتنا چاہے پھانسیاں دی جائیں، کشمیریوں کو پیلٹ گنز اور گولیوں سے چھلنی کیا جائے،، تحریک آزادی کشمیر کو ختم نہیں کیا جا سکتا۔

سینئر حریت رہنما الطاف بٹ نے افضل گورو کو زبردست خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ افضل گورو اور دیگر شہدا کی قربانیوں سے تحریک آزادی میں نئی جان آئی، پھانسی کے بعد افضل گوروکی جیل میں تدفین بھارتی خوف وبوکھلاہٹ کا ثبوت تھا، بھارتی سپریم کورٹ کا افضل گورو کی پھانسی کا فیصلہ عدالتی قتل ہے۔

Comments are closed.