میگا منی لانڈرنگ مقدمہ کراچی سے راولپنڈی منتقل کرنے کی منظوری

کراچی: بینکنگ کورٹ کراچی نے منی لانڈرنگ کیس راولپنڈی منتقل کرنے کی درخواست منظور کرلی۔ آصف زرداری اور فریال تالپورسمیت 19 ملزمان کی عبوری ضمانت بھی واپس لے لی گئی،

سابق صدر آصف علی زرداری کہتے ہیں مقدمے منتقل ہوتے رہتے ہیں۔ انور مجید کے بیٹے گرفتاری سے بچنے کیلئے سندھ ہائی کورٹ پہنچ گئے۔

بینکنگ کورٹ کراچی میں 35 ارب روپے کی میگا منی لانڈرنگ سے متعلق کیس کراچی سے راوالپنڈی منتقل کرنے کی درخواست پر سماعت ہوئی۔

عدالت نے آصف زرداری، فریال تالپور،نمر مجید،ذوالقرنین مجید،علی مجید اور دیگر کی ضمانتیں بھی ختم کر دیں۔ سابق صدر آصف زرداری تاخیر سے عدالت پہنچے۔

آصف زرداری اور انکی ہمشیرہ کے وکیل نے فیصلے کو سندھ ہائی کورٹ میں چیلنج کرنے کا اعلان کر دیا۔ سابق صدر کی آمد پر عدالتی احاطے میں سخت سیکیورٹی انتظامات کئے گئے تھے۔۔ پی پی کارکنان اور رہنما سعیدغنی، سینٹر قیوم سومرو ، راشد ربانی بھی عدالت پہنچے۔

فریال تالپور عدالت میں پیش نہیں ہوئیں۔ وکیل کی جانب سے طبعیت ناساز ہونے پر استثنی کی درخواست دائر کی گئی۔

Comments are closed.