آئی ایم پاکستان ڈیمز فنڈ مہم، کینیڈا میں پہلے روز 8 لاکھ 40 ہزار ڈالر جمع

مونٹریال: آئی ایم پاکستان موومنٹ (ورلڈ وائیڈ)  کی دعوت پر سابق چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کینیڈا پہنچ گئے، جہاں پر دیامر بھاشا اور مہمند ڈیمز کیلئے چندہ مہم کے سلسلے میں مختلف تقاریب میں شرکت کریں گے۔ پاکستانی برادری نے مونٹریال میں پہلی دو تقاریب کے دوران مجموعی طور پر 8 لاکھ 40 ہزار ڈالر کے عطیات جمع کرائے۔

تقریب کے آغاز پر نیوزی لینڈ میں مساجد پر دہشت گردی کی شدید الفاظ میں مذمت کی گئی اور واقعہ میں جاں بحق افراد کے بلندی درجات اور زخمیوں کی صحت یابی کے لئے دعا کی گئی۔ آئی ایم پاکستان موومنٹ کے چیئرمین احمد سید نے کہا کہ ڈیمز کیلئے فنڈز پانچ برسوں میں بیرون ملک مقیم پاکستانی پورا کر کے دیں گے۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سابق چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ سپریم کورٹ کو اللہ نے توفیق دی کہ اس معاملے کو اٹھائے۔بیرون ملک پاکستانیوں عطیات دینے کے لئے بہت جوش و خروش کا مظاہرہ کر رہے ہیں۔ کالاباغ ڈیم بنانا بہت آسان تھا۔ لیکن ہمارے لئے پاکستان کی وحدت بہت ضروری تھی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ڈیم فنڈ کے لئے چندہ جمع کرنے کے عمل کو تضحیک کا نشانہ بنایا گیا، ڈیم تو ضرور بن کے رہے گا

میاں ثاقب نثار نے کہا کہ انہوں نے موجودہ وزیراعظم کو بتایا کہ ڈیم کا نہ بننا مجرمانہ غفلت ہے۔ تربیلا کے بعد پاکستان میں ڈیم نہ بننے کی وجوہات کی تحقیقات ہونی چاہیئں۔ حکومتوں کی بے عملی کی وجہ سے ڈیم تعمیر کے لئے سپریم کورٹ کو آگے آنا پڑا۔ وزیراعظم عمران خان کا ڈیم فنڈ کا حصہ بننا خوش آئند ہے۔ لوگوں سے عطیات لینے کا مقصد لوگوں کو اس مقدس فریضے میں شریک کرنا تھا۔ آپ لوگوں کے عطیات صرف ڈیم کی تعمیر پرخرچ ہونگے۔ یہ ڈیم پاکستان کے مستقبل کے لیے اہم ہے۔

ثاقب نثار کاکہنا تھا کہ کراچی میں ٹینکر مافیا کے خلاف ازخود نوٹس لیا۔ فخر ہے کہ میں نے ملکی سالمیت کے خلاف معاملے پر ازخود نوٹس کا استعمال کیا۔

سینیٹر فیصل جاوید خان نے کہا کہ آئی ایم پاکستان موومنٹ کا کردار قابل ستائش ہے۔ پاکستان میں 80  فیصد پانی ضائع کردیا جاتا ہے، ہمارے پاس صرف دو بڑے آبی ذخائر ہیں۔ جو لوگ کہتے ہیں ڈیم نہیں بنے گا انہیں بتانا چاہتا ہوں ڈیم ضرور بنے گا۔ کیونکہ عمران خان ناممکن کو ممکن بنانا جانتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ڈیم کے لئے فنڈ ریزنگ تین کروڑ روزانہ سے بڑھ کر ساڑھے پانچ کروڑ ہو گئی ہے۔ حکومت نے ڈیم تعمیر کے لئے 17 ارب روپے جاری کئے ہیں۔ چیئرمین واپڈا کے مطابق 20 مارچ کو مہمند ڈیم پر کام شروع ہوجائے گا۔ دیامر بھاشا ڈیم پر کام رواں برس اکتوبر میں شروع ہو گا۔

Comments are closed.