نیوزی لینڈ مساجد پر حملوں میں 6 پاکستانیوں کے شہید ہونے کی تصدیق

کرائسٹ چرچ: نیوزی لینڈ میں آسٹریلوی دہشت گرد برینٹن ٹیرینٹ کے مساجد پر حملوں میں 6 پاکستانیوں کے شہید ہونے کی تصدیق کردی گئی ہے، جب کہ تین لاپتہ پاکستانیوں کی شناخت اور معلومات حاصل کرنے کا عمل ابھی تک جاری ہے۔

نیوزی لینڈ میں پاکستانی ہائی کمشنر کے پولیٹیکل منسٹر سید معظم شاہ کا کہنا ہے کہ مساجد پرحملوں کے واقعے میں6 پاکستانیوں کی شہادت کی تصدیق ہوگئی، تین پاکستانیوں کی ابھی تصدیق نہیں کرسکتے۔

انہوں نے بتایا کہ شہید ہونے والوں میں سہیل شاہد، سید جہان داد علی، سید اریب احمد، محبوب ہارون، نعیم رشید اور طلحہ نعیم شامل ہیں۔ سید معظم شاہ کا کہنا ہے کہ نعیم رشید اور طلحہ نعیم کا تعلق ایبٹ آباد سے ہے لیکن ان کی تدفین نیوزی لینڈ میں ہی ہوگی۔

حملے میں زخمی ہونے والے ایک اور پاکستانی شہری کی شناخت محمد امین ناصر کے نام سے ہو گئی تھی۔ جو تشویش ناک حالت میں اسپتال میں زیرعلاج ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل کے مطابق محمد امین ناصر نامی پاکستانی شہری کی شناخت ہوئی ہے، 67 سالہ محمد امین ناصر کا تعلق حافظ آباد سے ہے جو حملہ آور کی گولیوں سے شدید زخمی ہوئے۔  محمد امین ناصر انتہائی نگہداشت کے یونٹ میں زیرعلاج ہے،ڈاکٹرزکے مطابق ان کی حالت تشویش ناک ہے۔

وزارت خارجہ نے واقعہ کے بعد کرائسسز مینجمنٹ سیل قائم کر دیا ہے، چار رکنی سیل میں پاکستانی ہائی کمشنر عبدالمالک، وزارت خارجہ کے افسران ثمینہ مہتاب، عرفان اللہ خان اورمحمد رمضان بھی سیل میں شامل ہیں۔

کرائسز مینجمنٹ سیل متاثرہ پاکستانی خاندانوں اور نیوزی لینڈ حکومت کے ساتھ رابطے میں ہے، متاثرہ خاندان00642777745،006444790026، 006444790027 ،،،، 0519203805، 03120010000، 0519202623 ،،،، 03006051847 اور 0519224415 پر رابطہ کر سکتے ہیں۔

Comments are closed.