ملابرادرسمیت طالبان مذاکراتی ٹیم پر عائد سفری پابندیاں ختم

نیویارک: اقوام متحدہ نے افغان امن مذاکرات میں شرکت کرنے کے لیے طالبان کی مذاکراتی ٹیم کے سربراہ ملا برادرز سمیت 11 اراکین پر عائد سفری پابندیاں عارضی طور پرختم کر دی ہیں۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ نے ملاعبدالغنی برادر اور ڈپٹی لیڈرشیرمحمد عباس استانکزئی سمیت 11 طالبان نمائندوں کو قطر میں ہونے والے افغان امن مذاکرات کے لیے سفر کرنے کی اجازت دے دی ہے۔ سفری پابندیوں میں اس حالیہ نرمی کا اطلاق یکم اپریل سے 31 دسمبر تک ہوگا۔

اقوام متحدہ کی سیکیورٹی کونسل نے بھی اپنے ایک بیان میں واضح کیا ہے کہ افغان طالبان نمائندوں کو دی گئی سفری اجازت صرف امن اور مصالحتی مذاکرات میں شرکت کے لیے مخصوص ہے، علاوہ ازیں طالبان کے منجمد اثاثوں کی محدود بحالی بھی کی گئی ہے۔

طالبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے غیرملکی خبر رساں ادارے سے بات کرتے ہوئے طالبان نمائندوں کو اقوام متحدہ کی جانب سے دیئے گئے سفری پابندی پر استثنیٰ حاصل ہونے کی تصدیق کی ہے، اس سہولت کے بعد قطر میں ہونے والے مذاکرات میں طالبان نمائندے بھرپور طریقے سے شرکت کریں گے۔

Comments are closed.