لیہ میں وین ڈرائیور کی ساتھیوں سمیت طالبہ سے اجتماعی زیادتی

لیہ: جنوبی پنجاب کے علاقے فتح پورمیں حوا کی ایک اور بیٹی درندوں کی ہوس کا نشانہ بن گئی، گیارویں جماعت کی طالبہ سے مبینہ طور پر اجتماعی زیادتی کی گئی، ملزمان لڑکی کی حالت غیر ہونے پر نجی اسپتال میں چھوڑ کر فرار ہوگئے۔

لیہ کے قریب فتح پور کے علاقے میں گیارہوی جماعت کی طالبہ کو پرائیویٹ وین کے ڈرائیور اور اس کے ساتھی نے ویرانے میں لے جا کر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا۔ طالبہ کی حالت غیر ہونے پر اسے پرائیویٹ کلینک لے جایا گیا، تاہم کلینک انتظامیہ نے طالبہ کی حالت دیکھتے ہوئے اس کے علاج سے معذرت کر لی۔ درندہ صفت ملزمان طالبہ کو وہیں چھوڑ کر فرار ہوگئے۔

اطلاع ملنے پر پولیس نے متاثرہ طالبہ کو تحصیل ہسپتال فتح پور منتقل کیا، جہاں پر طبی معائنہ میں طالبہ سے زیادتی ثابت ہوگئی۔ پولیس تھانہ فتح پور نےمتاثرہ طالبہ کے والد کی مدعیت میں مقدمہ درج کرلیا۔ پولیس نے وین ڈرائیور کے ساتھی ملزم ندیم کو گرفتار کرلیا تاہم مرکزی ملزم کی تلاش جاری ہے۔

پولیس کاکہناہےکہ وین ڈرائیور ابراہیم اور دوسرے نامعلوم ملزم کی تلاش کیلئے چھاپے مارے جارہے ہیں۔

Comments are closed.