آصف علی زرداری کی 6مقدمات اور تحقیقات میں ضمانت میں توسیع

اسلام آباد : ہائی کورٹ نے سابق صدر آصف علی زرداری کی 6 مقدمات میں ضمانت میں توسیع کردی۔ پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین نے کہا نیب اور معیشت ایک ساتھ نہیں چل سکتے حکومت کے خلاف سڑکوں پر آئیں گے، بلاول بھٹو شہید بی بی کا بیٹا ہے، انگاروں پر چلے گا ۔

دو رکنی بنچ کے روبروآصف زرداری کے وکیل فاروق ایچ نائیک نے مؤقف اختیار کیا کہ نئے نئےطلبی کے نوٹسز آ رہے ہیں ، جسٹس عامر فاروق نےکہا یہ تو لگتا ہےطلبیوں اور ضمانتوں کا سیلاب آ رہا ہے ۔۔۔ نیب پراسیکیوٹر کا کہنا تھا پارک لین کیس تیار ہے ، آصف زرداری کے وارنٹ گرفتاری جاری ہو چکے ہیں ۔ عدالت نے آصف زرداری کی 6 نیب انکوائریز اور تحقیقات میں ضمانت میں توسیع کر دی ۔ پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین نے حکومت کیخلاف تحریک چلانے کا اعلان کردیا۔

عدالت نے پارک لین کیس میں آصف زرداری کی ضمانت میں 12 جون تک ، بلٹ پروف گاڑیوں اور توشہ خانہ تحائف کے کیس میں ضمانت میں 20 جون تک توسیع کر دی۔ ہریش کمپنی میں ان کی 30 مئی ، مشکوک ٹرانزیکشنز کیس میں 18 جون تک گرفتاری نہیں کی جا سکے گی۔ اوپل 225 انکوائری میں آصف زرداری اور فریال تالپور کی ضمانت میں 11 جون تک ، میگا منی لانڈرنگ کیس میں 29 مئی تک توسیع کر دی گئی ۔

Comments are closed.