آئندہ بجٹ میں سگریٹ اور کاربونیٹڈ درنکس پر ہیلتھ ٹیکس لگانے کا فیصلہ

اسلام آباد: حکومت نے سگریٹ اور کاربونیٹڈ ڈرنکس پر ہیلتھ ٹیکس  عائد کرنے کی تیاری کر لی ہے۔ سگریٹ کے پیکٹ پر دس روپے اور کاربونیٹڈ ڈرنکس کی بوتل پر ایک روپے ہیلتھ ٹیکس وصول کیا جائےگا۔ وزیراعظم کے فوکل پرسن بابر بن عطا کہتے ہیں موت کے سوداگروں کی بلیک میلنگ میں نہیں آئیں گے۔

دستاویز کے مطابق وفاقی حکومت نے 20 سگریٹ کے پیکٹ پر 10 روپے اور کاربونیٹڈ ڈرنکس کی 250 ملی لٹر والی بوتل پر ایک روپیہ ہیلتھ ٹیکس عائد کرنےکا فیصلہ کیا ہے۔ سگریٹ اور ڈرنکس پر ٹیکس سے حاصل ہونے والی رقم صحت کے شعبے کی ترقی پر خرچ کی جائے گی۔

آئندہ بجٹ میں سگریٹ اور تمباکو کی دیگر مصنوعات کی غیرقانونی پیداوار اور تجارت کی روک تھام کے لیے اقدامات بھی تجویز کئے جائیں گے۔ وزیر اعظم کے فوکل پرسن بابر عطا نے کہا ہے کہ تمباکو نوشی کی حوصلہ شکنی کےلئے تاریخ میں پہلی بار بھاری ٹیکس لگانے جا رہے ہیں ، اس سے 40 سے 50 ارب روپے کے وسائل حاصل ہوں گے ۔

Comments are closed.