بے نامی جائیدادیں رکھنے والوں کے خلاف کریک ڈاون کا فیصلہ

اسلام آباد: آئندہ مالی سال کے بجٹ کے بعدبے نامی جائیدادیں رکھنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کر دیا جا ئے گا۔۔ یکم جولائی سے بے نامی جائیدادوں اور اثاثے رکھنے والوں کے خلاف ٹیکس حکام ایکشن میں ہوں گے۔ کارروائی کے لیے اتھارٹی کا قیام عمل میں لایا جائے گا۔

حکومت نے بجٹ میں حکمت عملی مرتب کرلی ہے، بے نامی جائیدادیں رکھنے والوں کے خلاف کارروائی کےلیے اتھارٹی قائم کر کے مقدمات کی سماعت کے لیے اپلیٹ ٹربیونلز بنائے جائیں گے۔

 اتھارٹی کے قیام کے لیے بجٹ میں گریڈ17 تا 21 کی 10 نئی آسامیوں کی منظوری دی جائے گی،اتھارٹی بے نامی جائیداد رکھنے والوں کو نوٹس بھیجنے اور تسلی بخش جواب نہ ملنے پر بے نامی جائیداد تحویل میں لینے کی مجاز ہوگی۔۔ اتھارٹی کے پاس 90 دنوں بعد بے نامی جائیداد فروخت کرنے کا بھی اختیار ہوگا۔

 دوسری جانب ٹربیونلزبے نامی جائیداد کی مالیت ، اس پرٹیکس اور نوٹس کی سماعت کریں گے جبکہ بے نامی جائیداد رکھنے والوں کی اپیلیں بھی سنی جائیں گی۔۔بجٹ میں جائیدادوں کی مالیت میں اضافہ کرکے مارکیٹ ریٹ کے 75 فیصد کے برابر لانے کی بھی تجویز ہے۔

Comments are closed.