جعلی اکاؤنٹس کیس میں فریال تالپور گرفتار، اسلام آباد کی رہائشگاہ سب جیل قرار

اسلام آباد: قومی احتساب بیورو نے جعلی اکاؤنٹس کے ذریعے اربوں روپے کی منی لانڈرنگ کے کیس میں پیپلز پارٹی کی رہنما اور سابق صدر آصف زرداری کی ہمشیرہ فریال تالپور کو اسلام آباد میں گرفتار کر لیا ہے۔

نیب نے فریال تالپور کی اسلام آباد کے سیکٹر ایف 8 ٹو میں رہائش گاہ کو سب جیل قرار دے دیا ہے، پیپلزپارٹی کی رہنما کی گرفتاری کے بعد ان کا طبی معائنہ کرایا گیا، نیب کی ٹیم فریال تالپور کو ہفتہ کو ریمانڈ کے لیےعدالت پیش کرے گی۔ ریمانڈ حاصل کرنے کے بعد جعلی اکاؤنٹس کیس کی تفتیش کو آگے بڑھایا جائے گا۔
فریال تالپور کی گرفتاری کے بعد نیب کی جانب سے جاری اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ فریال تالپور تاحکم ثانی اپنے گھر میں قید رہیں گی، قومی احتساب بیورو نے ماضی میں بھی فریال تالپور کا احترام کیا، آئندہ بھی ان کی عزت کی جائے گی۔

نیب تحویل میں آصف زرداری کی پیشی،عبدالغنی مجید کی عدم پیشی پر چیف سیکرٹری کو شوکاز نوٹس

قبل ازیں جعلی بینک اکاؤنٹس کیس میں احتساب عدالت نے فریال تالپور کی آج کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور کر لی تھی۔ آصف زرداری کی نیب تحویل میں عدالتی پیشی۔۔ وکلا کو ملاقات کی اجازت نہیں دی گئی۔عدالت نے عبدالغنی مجید کو کراچی کی ملیر جیل سے پیش نہ کرنے پر چیف سیکرٹری سندھ کو شوکاز نوٹس بھجوانے کا حکم دے دیا ۔

عدالت نے فریال تالپور اور دیگر ملزمان کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواستیں منظور کر لیں ۔ آصف زرداری کے وکلا نےاستدعا کی کہ وہ اپنے مؤکل سے جیل میں ملنا چاہتے ہیں اجازت دی جائے ۔ اس پر جج ارشد ملک نے کہا آپ علیحدہ سے ایک درخواست لکھ کر دے دیں۔ عدالت کے استفسار پر نیب نے بتایا کہ تین ملزمان کرن امان ، نورین سلطان اور عقیل شاہ راشدی کی ، وعدہ معاف گواہ بننے کی درخواستوں کو ابھی منظور نہیں کیا گیا ۔ دو ملزمان ناصر عبداللہ اور اعظم وزیر کے ریڈ وارنٹ کے لئے وزارت داخلہ سے رجوع کیا گیا ہے تاہم انہیں اس متعلق مزید دستاویزات درکار ہیں ۔

ملزم عبدالغنی مجید کو ملیرجیل سے پیش نہ کرنے پر فاضل جج نے ریمارکس دیئے چیف سیکرٹری سندھ نے یہ بھی گوارا نہیں کیا کہ وہ عدالت میں پیش ہو جائیں یا جواب دیدیں ، ان کیخلاف کارروائی کروں گا ۔ عدالتی عملے نے بتایا چیف سیکرٹری کو پہلا نوٹس بھیجا تھا شوکاز ابھی دفتر سے ارسال ہی نہیں ہوا ۔ جج ارشد ملک نے کہا 20 دن ہو گئے شوکاز نوٹس ہی نہیں بھجوایا گیا ؟ نوٹس فوری جاری کیا جائے ۔ عدالت نے  ملزمان کو ریفرنس کی نقول فراہم کرنے کا حکم دیتے ہوئے سماعت 27 جون تک ملتوی کر دی ۔

Comments are closed.