بجٹ 2019.20 ۔۔۔ سندھ وفاق پر بازی لے گیا

کراچی: سندھ وفاق پر بازی لے گیا، سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پینشن میں 15 فیصد اضافے کی تجویز میٹرک، انٹر کےطلبہ کی امتحانی اور انرولمنٹ فیس ختم کر دی گئی ۔ کراچی میں چھوٹے ڈیمز کی تعمیر کیلئے بجٹ میں خطیر رقم مختص کی گئی ہے، سندھ کابینہ نے بارہ کھرب17 ارب روپے کے نئے مالی سال کے بجٹ کی منظوری دے دی۔

سندھ میں سرکاری ملازمین اور پینشن لینے والوں کے مزے آگئے۔تنخواہوں اور پینشن میں پندرہ فیصد اضافے کی تجویز۔۔ وزیراعلیٰ سندھ کی زیرصدارت پری بجٹ اجلاس میں سندھ کابینہ نے نئے مالی سال کے بجٹ تجاویز کی منظوری دے دی۔ سال 2019-20 کے بجٹ کا حجم 12 کھرب17 ارب روپے لگایا گیا ہے۔ جبکہ بجٹ خسارہ صفر ہے۔

صوبائی ترقیاتی پروگرام 290 ارب رکھنے کی تجویز دی گئی ہے۔ تعلیم،صحت، بلدیات سمیت مختلف محکموں کے بجٹ میں 10 سے 15 فیصد اضافے کی تجویز ہے۔۔ ضلعی حکومتوں کیلئے 45 ارب،امن و امان کیلئے 105 ارب روپے، کراچی میں فلائی اوورز اور انڈر پاسز کیلئے 20 سے 30 ارب تجویز کئے گئے ہیں۔

بجٹ میں سندھ کے تعلیمی، بورڈز کی تمام فیس ختم کرنے کا بڑا فیصلہ کیا گیا ہے، میٹرک ، انٹر کےطلبہ کی امتحانی اور انرولمنٹ فیس ختم کرنے کی تجویز ہے۔

ڈاکٹرز کو بنیادی تنخواہ پرہیلتھ اضافی ہیلتھ الاؤنس دیاجائےگا۔ حکومت نے پانی بحران سے نمٹنے کیلئے کراچی میں چھوٹے ڈیمز کی تعمیر کیلئے بجٹ میں خطیر رقم مختص کی ہے۔ شہید پولیس اہلکاروں کےاہلخانہ کےلیےمعاوضہ بھی دوگنا کرنے کافیصلہ کیا گیا ہے۔

Comments are closed.