نوجوان مجاہد کمانڈر برہان برہانی کی 3 برسی، مقبوضہ وادی چھاؤنی میں تبدیل

مظفرآباد: بھارت کے زیرِ تسلط کشمیر میں شہید ہونے ولے نوجوان مجاہد کمانڈر برہان مظفر برہانی کی 3 برسی کے موقع پر جدو جہد آزادی سے یکجہتی کی تجدید کے لیے آزاد کشمیر میں ریلیوں اور جلسوں کا انعقاد کیا جارہا ہے۔

غاصب بھارتی فوج نے اپنے مظالم کے خلاف احتجاج روکنے کیلئے پوری مقبوضہ وادی کو فوجی چھاؤنی میں تبدیل کردیا ہے۔ شہرشہر مکمل ہڑتال ہے اوربرہان وانی کی تصاویروالے بینرزاورپوسٹرزشہرشہرآویزاں کردئیے گئے ہیں۔

برہان مظفروانی کی تیسری برسی پرحریت قیادت کی کال پروادی بھرمیں مکمل ہڑتال ہے جب کہ کٹھ پتلی انتظامیہ نے موبائل اورانٹرنیٹ سروس بھی معطل کردی ہے اورآزادی کے پروانوں کو وانی کے آبائی علاقے ترال تک مارچ کرنے کو کہا گیا ہے۔

بھارت کے زیر تسلط کشمیر میں سب سے پرانے متحارب گروہ حزب المجاہدین کے چیف آف آپریشن برہان وانی کو بھارتی فوج نے 8 جولائی 2016 کو بمدورا گاؤں میں ایک مبینہ ان کاؤنٹر میں ان کے 2 ساتھیوں سمیت شہید کردیا تھا۔

اسکول ہیڈماسٹر کے بیٹے برہان وانی کو 2011 سے مقبوضہ کشمیر میں مسلح جدو جہد کی وجہ سے جانا جاتا تھا، وہ باقاعدگی سے سوشل میڈیا پر ویڈیو میسیج پوسٹ کرتے رہتے تھے جس میں نوجوانوں کو بھارت مخالف جدو جہد میں شامل ہونے کی دعوت دیتے تھے۔

ان کی شہادت کے بعد مقبوضہ وادی میں 100 سے زائد روز تک طویل ترین کرفیو لگا رہا اس دوران قابض فورسز نے احتجاجی مظاہروں کو دبانے کے لیے بے رحمی سے متعدد افراد کو قتل کیا۔نئی دہلی کے مفروضوں کے برعکس برہان وانی کی شہادت نے بھارت مخالف تحریک میں نئی جان ڈال دی اور سینکڑوں پڑھے لکھے نوجوان اس میں شامل ہوئے۔

برہان وانی کی تیسری برسی کے موقع پر آزاد کشمیر کے وزیراعظم راجہ فاروق حیدر کا کہنا تھا کہ برہان مظفر وانی ایک بہادرنوجوان رہنما تھے جن کی شہادت نے قوم کی جدو جہد آزادی کو نئی قوت بخشی۔ برہان وانی جدوجہد آزادی کشمیر کا علامت بن گئے، نہ صرف آزاد کمشیر میں ہم بلکہ گلگت بلتستان کے ساتھ پوری پاکستانی قوم اس مشکل وقت میں آپ کے ساتھ ہے۔

وزیراعظم آزادکشمیر نے کہا کہ برہان وانی کی برسی کے موقع پرعہد کرتےہیں کہ ان کے مشن کو کامیاب ہونے تک تمام کوششیں جاری رکھیں گے۔ وزیراعظم نے کہا کہ بھارت کے زیر تسلط کشمیر کے حریت رہنماؤں سید علی گیلانی، میر واعظ عمر فاروق، یاسین ملک، شبیر احمد شاہ، آسیہ اندرابی، ظفر اکبر بھٹ اور دیگر کو بھی خراجِ تحسین پیش کیا۔

Comments are closed.