نئے چیئرمین سینیٹ کے لیے اپوزیشن کا میرحاصل بزنجو کے نام پر اتفاق

اسلام آباد: متحدہ اپوزیشن کی جانب سے قائم رہبر کمیٹی نے چیئرمین سینیٹ کیلیے بلوچستان نیشنل پارٹی کے میرحاصل بزنجو کے نام پراتفاق کرلیا۔

نیوز ڈپلومیسی کے مطابق چیئرمین سینیٹ کی تبدیلی پر حزب اختلاف کی اعلیٰ قیادت نے مشاورت مکمل کرلی، بلوچستان سے تعلق ہونے کی بنیاد پر میر حاصل بزنجو مضبوط امیدوار بن گئے تاہم اپوزیشن جماعتوں کی اعلیٰ قیادت نے راجہ ظفرالحق پر بھی اعتماد کا اظہار کیا۔ ذرائع کے مطابق مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف نے بھی میر حاصل بزنجو کو چیئرمین سینیٹ بنانے کے فیصلے پر اعتماد کا اظہار کردیا۔

رہبر کمیٹی اجلاس کے بعد اپوزیشن رہنمائوں نے میڈیا سے بات کی اس موقع پر جے یو آئی (ف) کے رہنما اکرم درانی نے کہا کہ اپوزیشن نے میر حاصل بزنجو کو چیئرمین سینیٹ کا امیدوار نامزد کیا ہے، آج انتہائی یکجہتی اور محبت سے چیئرمین سینیٹ کے نام پر اتفاق کیا، تمام جماعتیں میر حاصل بزنجو کو اپنا امیدوار مان کر ان کی جیت کی کوشش کریں گی۔

مسلم لیگ (ن) کے احسن اقبال کا کہنا تھا کہ حکمران سینیٹ اجلاس بلانے سے راہ فرار اختیار کر رہے ہیں تاہم کسی کو جمہوریت اور آئین کے ساتھ کھیلنے کی اجازت نہیں دیں گے، حکومت کے پاس نمبر پورے نہیں وہ کامیاب نہیں ہوں گے، مسلم لیگ متحد ہو کر چیئرمین سینیٹ کے لے ووٹ دے گی۔

پیپلزپارٹی کے نیر بخاری نے  حاصل بزنجو کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بلوچستان سے تعلق رکھنے والے حاصل بزنجو کا چیئرمین سینیٹ نامزد ہونے کا فیصلہ خوش آئند ہے، میر حاصل بزنجو نے جمہوریت کے لئے بے پناہ قربانیاں دی ہیں،  حاصل بزنجو چیئرمین سینیٹ منتخب ہوکر آئین کی بالادستی کے لئے اپنا بھرپور کردار ادا کریں گے۔

چیئرمین سینیٹ کے لیے نامزد امیدوار میر حاصل بزنجو نے میڈیا نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ تمام اپوزیشن جماعتوں نے ان پر جس اعتماد کا اظہار کیا ہے وہ اس پر پورا اترنے کی کوشش کریں گے۔ ایک سوال کے جواب پر ان کا کہنا تھا کہ الیکشن کے دوران ووٹ کیلئے ہر گھر جانا امیدوار کا فرض ہوتا ہے، اسی طرح وہ حکومتی اراکین سے بھی ووٹ دینے کی درخواست کریں گے۔

Comments are closed.