ایف بی آر بھی مصلحت کا شکار۔۔۔ سیاسی شخصیات کیخلاف کارروائی موخر

اسلام آباد: سیاسی دباو کام کر گیا۔۔۔ ایف بی آر نے بے نامی دار سیاسی شخصیات کے خلاف کارروائی کے لیے نوٹسزروک لیے۔نئی حکمت عملی کے تحت اب صرف 50 نوٹسز جاری ہوں گے، عملدرآمد ہوا تو بات آگے بڑھے گی۔

ایف بی آر ذرائع کے مطابق ٹیکس چوری سے متعلق نوٹس کو سیاسی رنگ دیا جاتا ہے ، اس لیے اب ہر ماہ صرف 50 نوٹسز جاری کیے جائیں اور انہیں منطقی انجام تک پہنچانے کے بعد ہی مزید نوٹسز جاری ہوں گے ۔ یوں ٹیکس چوروں کے خلاف جاری کیے جانے والے 50 لاکھ نوٹس بھی دبا لیے گئے۔

ذرائع کاکہنا ہے کہ ایف بی آر کو نون لیگی سینیٹرچوہدری تنویر اور اومنی گروپ کے خلاف جاری نوٹس کے جوابات بھی ابھی تک موصول نہیں ہوئے ۔

دوسری جانب کارکر دگی میں بہتری کے لیے بڑے پیمانے پرٹیکس افسران اور عملے کے تبادلے کیے گئے لیکن اس کا نتیجہ بھی الٹ نکلا، اقدام سے ٹیکس چوروں کے خلاف کارروائی مزید سست روی کا شکا ر ہو گئی۔

Comments are closed.