بات چیت کیلئے رابطے ہورہے ہیں لیکن اصولوں کی قربانی نہیں دیں گے، مریم نواز

اسلام آباد: پاکستان مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ ڈیل کی باتیں کرنے والوں کو خود ڈیل کی اشد ضرورت ہے۔ بات چیت کے لئے مسلم لیگ کی قیادت سے رابطے کیے گئے لیکن میاں نواز شریف اور میں اصولوں کی قربانی دینے کے لیے تیار نہیں۔

احتساب عدالت پیشی کے موقع پر صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیراعظم کی صاحبزادی کا کہنا تھا کہ ان سے متعدد بار رابطہ کیا گیا لیکن ہم بات چیت نہیں کی، کیونکہ اس کے لیے اصولوں کی قربانی دینا پڑتی ہے۔ مریم نواز کا کہنا تھا کہ وہ اور میاں نواز شریف دونوں ہی اصولوں کی قربانی دینے کے لیے تیار نہیں۔

پیشی کے موقع پر کارکنان باہر نہ نکلنے سے متعلق سوال پر مریم نواز کا کہنا تھا کہ کارکنان کی پکڑ دھکڑ جاری ہے وہ خود بڑی مشکل سے عدالت پہنچی ہیں۔ جتنے مرضی کارکنان گرفتار کرلیں مسلم لیگ (ن) ڈرنے والی نہیں۔ جب ہم سڑکوں پر نکلیں گے تو سب دیکھیں گے۔

مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر نے کہا کہ اگر ہم اسمبلی نہ جاتے تو اس حکومت کی نااہلی سامنے نہ آتی، کسی کی جرات نہیں ہے کہ اب آمریت کی طرف دیکھے، آمریت ناکام ہوچکی ہے، پرویزمشرف بیمار ہیں اللہ تعالی انہیں صحت دے، حکومت کو 5 سال دینے کے لیے تیار ہیں لیکن عوام نہیں دیںگے، کسی پارٹی کے بغیرہڑتال کامیاب ہونا حکومت کی ناکامی ہے۔ مسلم لیگ (ن) جمہوری کام کرے گی، پیپلزپارٹی اور فضل الرحمان کے ساتھ سڑکوں پر نکلنے کا فیصلہ پارٹی کرے گی۔

آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے بارے میں مریم نواز نے کہا کہ آئین اور قانون میں درج ایک لفظ بھی ادھر ادھر نہیں ہونا چاہیے ۔

Comments are closed.