چین اور روس مسئلہ کشمیر کا حل چاہتے، بھارتی صحافی

نئی دہلی:  مقبوضہ کشمیر میں غاصبانہ اقدامات کے بعد بھارت کا حقیقت پسندانہ طبقہ حقائق سامنے لگا ہے، سابق بھارتی فوجی، مصنف اور صحافی پراوین ساہنے کا چشم کشا بیان مودی سرکار کے منہ پر طمانچے کے مترادف ہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر جاری ایک پیغام میں بھارتی صحافی کا کہنا ہے کہ مودی حکومت پر پاکستان کیساتھ معنی خیز گفتگو کیلئے چین اور روس کا دباؤ ہے، دونوں ممالک پاک بھارت اعتماد سازی نہیں بلکہ مسئلہ کشمیر کے حل چاہتے ہیں۔ مودی حکومت کیلئے جلد مذاکرات کا آغاز کرنا ناگزیر ہوجائے گا۔

پراوین ساہنے نے بھارتی وزیراعظم نریندرا مودی کو آئینہ دکھاتے ہوئے لکھا ہے کہ ہم نے اپنی فوج کو دور جدید کی جنگ کے لئے ناکارہ بنا دیا ہے۔ بھارتی فوج انسداد عسکریت پسندی آپریشنز کے علاوہ لڑنے کی صلاحیت نہیں رکھتی۔

اپنے پیغام میں بھارتی صحافی کا کہنا ہے کہ آج ایک دورہ جدید کی جنگ ہمارے چہرہ کو گھور رہی ہے۔

Comments are closed.