عیدالاضحیٰ پر مقبوضہ کشمیر میں ظالمانہ لاک ڈاؤن قابل مذمت ہے، پاکستان

اسلام آباد: پاکستان نے بھارت کی جانب سے مقبوضہ جموں کشمیر میں عید الاضحیٰ کے موقع پر ظالمانہ لاک ڈاؤن کی شدید مذمت کی ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ پاکستان مقبوضہ جموں کشمیر میں کشمیری مسلمانوں کی مذہبی آزادی سلب کرنے اور ظالمانہ لاک ڈاؤن کی مذمت کرتا ہے۔ لاک ڈاؤن کے باعث لاکھوں کشمیری عید الاضحیٰ پر مذہبی فرائض ادا نہ کر سکے۔ ڈاکٹر محمد فیصل کے مطابق اسلامی احکامات کے مد نظر پوری دنیا میں مسلمان عید کے موقع پر بڑے اجتماعات میں نماز ادا کرتے ہیں جب کہ لاکھوں مسلمانوں کے مذہبی فرائض کی ادائیگی پر بھارتی پابندیاں بین الاقوامی قوانین  اور بنیادی انسانی حقوق کی بھی خلاف ورزی ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ مقبوضہ وادی کو بھارت نے فوجی جیل میں تبدیل کر دیا ہے، کشمیریوں کو سرینگر کی تاریخی جامع مسجد میں نماز ادا نہیں کرنے دی گئی یہاں تک کہ کشمیر میں ذرائع مواصلات کی مکمل بندش کے باعث کشمیری اہم مذیبی تہوار پر اپنے اہلخانہ سے رابطے سے بھی محروم رہے۔

ڈاکٹر محمد فیصل کے مطابق بھارتی اقدامات نہ صرف بڑے پیمانے پر اجتماعی سزا کے زمرے میں آتے ہیں بلکہ بھارتی اقدمات تمام انسانی حقوق اور قوانین کی خلاف ورزی ہیں جب کہ پاکستان نے اقوام متحدہ سمیت بین الاقوامی برادری سے بھارت کی مذہبی اور بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی پر کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

Comments are closed.