امریکی صدر کشمیر پر ثالثی کی پیشکش کو عملی جامہ پہنائیں، پاکستانی سفیر

واشنگٹن: امریکا میں تعینات پاکستان کے سفیر اسد مجید خان نے کہا ہے کہ مغرور بھارت کو خطے کے امن اور استحکام کی پروا نہیں۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی اپنی پیشکش کو عملی جامہ پہنائیں۔

امریکی میڈیا کو دیئے گئے ایک انٹرویو میں پاکستانی سفیر اسد مجید خان نے کہا کہ عالمی برادری مقبوضہ کشمیر کو متنازع علاقہ تسلیم کرتی ہے، سلامتی کونسل کی قرارداد میں کشمیر میں رائے شماری کا کہا گیا، بھارت نےسلامتی کونسل کی قراردادوں کی خلاف ورزی کی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کو مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر تشویش ہے، مقبوضہ کشمیر میں مکمل لاک ڈاؤن ہے، ایک کروڑ 20لاکھ کشمیریوں کا دنیا سے رابطہ کاٹ دیا، عوام کی اشیائے ضروریہ تک رسائی نہیں، سیکڑوں رہنما گرفتار کرلیے گئے۔

پاکستانی سفیر نے کہا کہ بھارت کشمیرمیں بحران پیدا کررہا ہے، یک طرفہ اقدامات سے مقبوضہ کشمیر میں کشیدگی بڑھائی گئی، بھارت کشمیر پر اپنے ناجائز قبضے اور بھیانک جرائم سے توجہ ہٹانے میں ناکام رہا، بھارت اس بار سرحد پار دہشت گردی کے جھوٹے الزامات سے جان چھڑاسکے گا ناں ہی کشمیر میں جبر کی بھیانک حقیقت سے  توجہ نہیں ہٹاسکے گا۔

اسد مجید خان نے کہا کہ کئی عالمی کنونشن بھارت کو مقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب نہ بدلنے کا پابند کرتے ہیں، بھارت میں برسر اقتدار جماعت بی جے پی مسلمانوں، عیسائیوں اور دلتوں کی حیثیت ختم کرنا چاہتی ہے۔

پاکستانی سفیر نے کہا کہ کشمیری عوام 72 برسوں سے حق خودارادیت کے منتظر ہیں، امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی ثالثی کی پیش کش کو کشمیریوں نے سراہا، بھارت نے کشمیر پر آرٹیکل 370 منسوخ کرکے امریکی پیشکش ٹھکرا دی، جس سے واضح ہوگیا کہ بھارت عالمی ذمہ داریوں پر زبانی جمع خرچ کے لیے بھی تیار نہیں، امریکا مداخلت کرے اور صدرٹرمپ کی ثالثی کی پیشکش کوعملی جامہ پہنائے۔ پاکستان امریکی مداخلت کا خیرمقدم کرے گا۔

اسد مجید خان کا کہنا تھا کہ غرور میں مبتلا بھارت کو خطے میں امن وسلامتی کی پروانہیں، بھارت نے 6 ماہ میں جنوبی ایشیا کو دوسری مرتبہ تنازع سے دوچار کیا، بھارتی اقدامات سے خطہ سنگین تنازع کے دہانے پر آگیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان بھارت کو خبردار کرچکے کہ دونوں ملک ہتھیاروں سے لیس ہیں، وہ دنیا کو بھی تنازع کے تباہ کن اثرات سے آگاہ کرچکے، ماضی میں دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی اتحادیوں کی سفارتی کوششوں سے کم ہوگئی تھی۔

پاکستانی سفیر نے کہا کہ چین نے بھی بھارتی اقدامات پر کڑی تنقید کی اور وہ اس سلسلے میں اپنا اثر و رسوخ بھی استعمال کرے گا، چین نے پاکستان کو مکمل تعاون کا یقین دلایا ہے۔

Comments are closed.