جعلی اکاؤنٹس کیس میں آصف زرداری کا 19 اگست تک جوڈیشل ریمانڈ منظور

اسلام آباد: احتساب عدالت نے سابق صدر آصف زرداری کو جعلی اکاؤنٹس کیس میں 19 اگست تک جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھجوانے کا حکم دے دیا۔

سابق صدر آصف علی زرداری کو 8 روزہ جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے کے بعد اسلام آباد کی احتساب عدالت میں پیش کیا گیا، نیب پراسیکیوٹر نے موقف اپنایا کہ جعلی بینک اکاؤنٹس کیس میں ایک نئی پیش رفت ہوئی ہے، ایک شریک ملزم کے بیان کے بعد آصف زرداری سے تفتیش کرنی ہے، مزید جسمانی ریمانڈ دیا جائے۔

سابق صدر کے وکیل لطیف کھوسہ نے آصف زرداری کے مزید جسمانی ریمانڈ کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ سابق صدر نے پہلے ہی کہا تھا کہ ایک ہی بار 90 روز کا ریمانڈ دے دیں، نیب والے 4 روز کا ریمانڈ لے کر پھر اگلی بار آ کر نیا ریمانڈ مانگ لیتے ہیں، باربار پیشی سے نقصان سرکاری خزانے کو ہی ہو رہا ہے۔

دوران سماعت آصف زرداری نے روسٹرم پر آ کر کہا کہ انہیں عید کی نماز بھی نہیں پڑھنے دی گئی، ڈی جی نیب عرفان منگی یہاں ہوں تو پوچھوں کہ یہ کون سی اسلامی ریاست ہے؟ عدالتی اجازت کے باوجود میری بیٹی کو مجھ سے ملنے نہیں دیا جاتا،عید پر بھی اہلخانہ سے ملاقات نہیں کرائی گئی۔

عدالت نے دلائل سننے کے بعد آصف زرداری کے مزید جسمانی ریمانڈ کی نیب کی درخواست مسترد کر دی اورسابق صدر کو 19 اگست تک جوڈیشل ریمانڈ پرجیل بھیج دیا۔

جعلی اکاؤنٹس کیس میں نامزد آصف زرداری کی ہمشیرہ فریال تالپور کی جانب سے عدالت میں متفرق درخواست دائر کی گئی جس میں موقف اپنایا گیا کہ انہوں نے سندھ اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کرنی ہے ان کا راہداری ریمانڈ دیا جائے۔ عدالت نے فریال تالپور کی درخواست پر نیب سے 19 اگست تک جواب طلب کر لیا۔

دریں اثناء سابق صدر آصف زرداری کو جیل میں اے کلاس دینے، میڈیکل سہولیات اور اہل خانہ سے ملاقات کی اجازت دینے کیلئے درخواست بھی دائرکرائی گئی۔سردارلطیف کھوسہ کی جانب سےدائر درخواست میں موقف اپنایاگیا کہ وکلاء کی ٹیم کو آصف زرداری سے ہفتے میں دو بارملاقات کی اجازت دی جائے۔ ملاقات سے پہلے دو تین گھنٹے انتظار کرایا جاتا ہے جو عدالتی توہین ہے۔

عدالت میں پیشی کے بعد سابق صدر آصف علی زرداری سے ان کی بیٹی آصفہ بھٹوزرداری سے ملاقات کرائی گئی، آصفہ بھٹو نے اپنے والد کی خیریت دریافت کی۔سابق وزیراعظم راجا پرویز اشرف، مصطفیٰ نواز کھوکھر اور فاروق ایچ نائیک نے بھی آصف زرداری سے ملاقات کی۔

Comments are closed.