واشنگٹن سے پہلے ریاض کا دورہ ۔۔۔ وزیراعظم سعودی قیادت کے تحفظات دور کریں گے

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان پاکستان میں سرمایہ کاری کے منصوبوں پر تحفظات دور کرنے کے لئے سعودی عرب کا دو روزہ دورہ کریں گے۔

وزیراعظم عمران خان کے  دورہ سعودی عرب اور امریکا کا شیڈول طے پاگیا۔ وزیراعظم 19 ستمبر کو سعودی عرب جب کہ 21 ستمبر کو امریکا جائیں گے،سعودی عرب میں محمد بن سلمان اور امریکہ میں صدر  ڈونلڈ ٹرمپ سے ملاقات کریں گے۔

سفارتی ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان 19ستمبر کو سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کی دعوت پر سعودی عرب روانہ ہوں گے جبکہ وزیرخارجہ، مشیر خزانہ اور مشیر تجارت بھی انکے ہمراہ ہوں گے۔

سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے رواں سال فروری میں اسلام آباد کا دورہ کیا، اس دورے کے دوران سعودی عرب کی جانب سے پاکستان میں 21 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کے معاہدوں پر دستخط  کیے گئے، ان منصوبوں میں قلیل، وسط اور طویل المدتی منصوبے شامل ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ سعودی عرب کو پاکستان میں سرمایہ کاری کے منصوبوں پر عمل درآمد سے متعلق تحفظات ہیں، سعودی عرب کو شکوہ ہے کہ طے شدہ معاہدوں پر کام سست روی کا شکار ہے جس میں تیزی لانی چاہیے۔ وزیراعظم عمران خان برادر ملک کے  تحفظات دور کرنے کے لئے خود سعودی عرب کا دورہ کر رہے ہیں۔

دو روزہ دورہ مکمل کرنے کے بعد پاکستانی قیادت امریکا روانہ ہوگی جہاں وزیر اعظم عمران خان جنرل اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کرینگے۔امریکا میں قیام  کے دوران  وزیراعظم عمران خان کی امریکی صدر کے ساتھ دوملاقاتیں ہوں گی۔

وزیراعطم امریکا میں اہم ممالک کے سربراہان سے ملاقاتیں  کریں گے، وزیر اعظم عمران خان جنرل اسمبلی سے خطاب میں مسئلہ کشمیر بھرپور طریقے سے اٹھائیں گے اور عالمی برادری  سے مقبوضہ کشمیر  میں  بھارتی  مظالم  ختم کروانے کا مطالبہ کریں گے۔

Comments are closed.