مقبوضہ کشمیرمیں کرفیو کےخاتمے تک بھارت سے مذاکرات نہیں کریں گے، فردوس عاشق

سیالکوٹ: معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان کا کہنا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین پامالیاں جاری ہیں، کرفیو کے خاتمے تک پاکستان بھارت کیساتھ مذاکرات نہیں کرے گا، مقبوضہ کشمیر کے عوام کو جنرل اسمبلی کے اجلاس سے بہت سی امیدیں وابستہ ہے۔

فردوس عاشق اعوان نے سیالکوٹ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا وزیراعظم کی ملاقاتوں کا محورمسئلہ کشمیررہا، وزیراعظم نے سعودی قیادت کوکشمیریوں پربھارتی مظالم سےآگاہ گیا،عمران خان کا دورہ امریکابھی انتہائی اہمیت کاحامل ہے،مقبوضہ کشمیرمیں انسانی حقوق کی پامالی جاری ہے،وزیراعظم نے سعودی آئل تنصیبات پرحملے کی مذمت کی، وزیراعظم مختلف ممالک کے سربراہوں سے ملاقات کریں گے، عمران خان امریکی صدر سے ملاقات بھی کریں گے۔

فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا مودی کو گجرات کا قصائی کہا جاتا ہے، امریکی صدرکو انسانیت کے قاتل مودی سے اجتناب کرنا چاہیے، جب تک بھارت مقبوضہ کشمیر سے محاصرہ ختم نہیں کرتا مذاکرات نہیں ہوسکتے، مودی نے عمران خان کے واشنگٹن جلسے کی نقل کرنے کی کوشش کی، مودی کا امریکا میں جلسہ کامیاب نہیں ہوگا، عمران خان نے ہمیشہ بحیثیت کھلاڑی، سیاستدان ٹرینڈ سیٹ کیے، وزیراعظم جنرل اسمبلی میں عالمی ضمیر کو جھنجھوڑیں گے۔

معاون خصوصی برائے اطلاعات کا کہنا تھا وزیراعظم پاکستان کا مثبت تشخص دنیا کے سامنے اجاگر کریں گے، سلامتی کونسل کا رکن بننے کا بھارتی خواب کبھی پورا نہیں ہوگا۔

Comments are closed.