فری لانس وزیر اپوزیشن اورمولانا فضل الرحمان کو مشورے نہ دیں، قمرزمان کائرہ

لاہور: پیپلزپارٹی کے رہنما قمرزمان کائرہ نے کہاہے کہ حکومتی فری لانس وزیر اپوزیشن اورمولانا فضل الرحمان کو مشورے نہ دیں کیونکہ حکومت نے جس آگ میں عوام کو جلایا ہے، اب ان کے پاؤں اس سے جلنے والے ہیں۔

لاہورمیں میڈیا سے گفتگو میں قمر زمان کائرہ کا کہنا تھا کہ قمر زمان کائرہ نے کہا کہ خورشید شاہ کو گرفتار کرلیا گیا ہے، ان پر 500 ارب روپے کا کیس ڈالا گیا ہے، خورشید شاہ کیخلاف جائیدادوں کی فرضی کہانی ہے۔ زرداری پر اربوں روپے کا الزام لگایا گیا چالان ڈیڑھ کا کروڑکا سامنے آیا۔ میرے رشتہ داروں کو ہراساں کیا جا رہا ہے، ہم نے مارشل کا مقابلہ کیا ایسے پارٹی نہیں چھوڑیں گے۔ کرپشن بہانہ سندھ حکومت نشانہ ہے، اگر مراد علی شاہ کو گرفتار کیا گیا تو وہی وزیراعلیٰ رہیں گے۔

پی پی رہنما کا پریس کانفرنس کے دوران کہنا تھا کہ کیا پنجاب میں کرپشن کے کیسزنہیں ہیں؟ میڈیا کا فوکس صرف سندھ کیوں ہے؟ مالم جبہ کیس پرکوئی توجہ نہیں، ایسے لگتا ہے سارا عذاب سندھ میں آگیا ہے، حکومت ایسے نہیں گرے گی قانون سے ماورا جانا پڑے گا۔

قمر زمان کائرہ کا کہنا تھا کہ احتساب کے نام پر ملک میں جو کچھ ہو رہا ہے اس کی مذمت کرتے ہیں، ہماری اوراپوزیشن کی قیادت کوٹارگٹ کیا گیا۔ ایک سال ہوگیا،ڈاکٹرعاصم کیس کا ابھی فیصلہ نہیں ہو رہا۔ سندھ حکومت گرانا آپ کے بس کی بات نہیں ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ملکی حالات کو دیکھ کر اب تو چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس آصف سعید کھوسہ بھی بول رہے ہیں۔ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے گن گانے والوں نے کشمیر کا مقدمہ پھنس کر رکھ دیا ہے۔

Comments are closed.