عمران خان کےخطاب سےکشمیریوں میں نئی امنگ، احتجاجی مظاہروں میں شدت

سرینگر: مقبوضہ جموں وکشمیر میں 57 روز سے مسلسل کرفیو اور جبری پابندیوں کا سلسلہ جاری ہے۔ وزیراعظم کے اقوام متحدہ میں خطاب کے بعد کشمیریوں میں نئی امنگ، سخت کرفیو کے باوجود 22 مقامات پر احتجاجی مظاہرے۔

عمران خان کے اقوام متحدہ جنرل اسمبلی سے خطاب نے کشمیریوں میں نئی امنگ پیدا کر دی، وزیراعظم کے خطاب کے مقبوضہ وادی میں 22 مقامات پر بھارت کے خلاف احتجاج ہوا۔ نہتے کشمیری بھارت کے جبر اور فوجی دہشت گردی کے سامنے سیسہ پلائی دیوار بن گئے۔

مظاہروں کو روکنے کے لیے قابض فورسز نے مزید سختیاں شروع کر دیں، پابندیاں نہ توڑنے کے لیے سری نگر کی سڑکوں پر اعلانات کیے گئے۔ وادی میں دکانیں اور کاروباری مراکز بند بند ہوئے دوسرا مہینہ ہونے کو ہے، مقبوضہ وادی میں کھانے پینے کا سامان، ادویات و دیگر ضروریات زندگی ناپید ہو گئی ہیں۔ ٹیلی فون اور انٹرنیٹ سمیت مواصلاتی نظام مکمل بند ہے، مسلسل لاک ڈاؤن نے کشمیریوں کو زندہ درگور کر دیا ہے ۔

Comments are closed.