میاں نواز شریف ریسٹورنٹ سے سیدھا جیل بھی جا سکتے ہیں، فردوس عاشق اعوان

اسلام آباد: معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا کہنا ہے کہ مسلم لیگ (ن) کی قیادت سرپر پاؤں رکھ کر باہر بھاگ چکی ہے۔ شریف برادران نے اپنے کارکنوں کو ایک بار پھر دھوکہ دیا اور انکے اعتماد کا خون کیا ہے۔

وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر جاری اپنے بیان میں کہا ہے کہ رانا ثناء اللہ اپنی قیادت کے ملک سے باہر بھاگ جانے پر ذہنی توازن کھو بیٹھےہیں، انہیں جس مقدمہ میں ضمانت ملی ہے اس کا ٹرائل ابھی باقی ہے، اس پر توجہ دیں۔

ان کا کہنا تھا کہ رانا ثناء اللہ کے بقول نوازشریف اگر ہسپتال سے گھر جا سکتے ہیں تو ریستوران بھی جاسکتے ہیں،اس کا مطلب ہے کہ ان کے قائد تندرست ہیں اور ریستوران سے سیدھا جیل بھی جا سکتے ہیں۔رانا ثناء اللہ پہلے اندرونی لڑائی میں مبتلا اپنی قیادت کے مابین پارٹی میں مڈ ٹرم انتخابات کرائیں۔

اپنی بات جاری رکھتے ہوئے معاون خصوصی برائے اطلاعات نے کہا کہ ان کی سیاسی ساکھ ختم اور قیادت سر پر پاؤں رکھ کر باہر بھاگ چکی ہے۔رانا ثناء اللہ سمیت دیگر لیگی رہنماؤں کو حکومت کے بجائے اپنی قیادت کو کوسنا چاہیے۔شریف برادران نے اپنے کارکنوں کو ایک بار پھر دھوکہ دیا اور انکے اعتماد کا خون کیا ہے۔

ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کے رہنما رانا ثناء اللہ کو مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ جس مقدمہ میں انہیں ضمانت ملی ہے اس کا ٹرائل ابھی باقی ہے، اس لئے اس پر میڈیا میں بیان بازی کی بجائے مقدمے کے ٹرائل پر توجہ دینا چاہئے۔

Comments are closed.