ملک بھرمیں 425 قیدی ایڈز،550 سےزائد ذہنی امراض میں مبتلا ہونے کا انکشاف

اسلام آباد: وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق ڈاکٹرشیریں مزاری نے ملک بھرکی جیلوں میں قیدیوں کی حالت سے متعلق رپورٹ اسلام آباد ہائی کورٹ میں جمع کرا دی ہے، جس میں انکشاف کیا گیا ہے کہ پانچ ہزار سے زائد بیمار قیدیوں میں سے 425 ایڈز جب کہ ساڑھے 5 سو سے زائد ذہنی امراض میں مبتلا ہیں۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کی جانب سے قائم کئے گئے کمیشن کی سربراہ وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق ڈاکٹر شیریں مزاری نے جیلوں کی حالت زار سے متعلق رپورٹ عدالت میں پیش کی۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ملک بھر کی جیلوں میں بیمار قیدیوں کی تعداد 5 ہزار 189ہے، جن میں سے 425 قیدی ایچ آئی وی ایڈز کے مرض میں مبتلا ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پنجاب کی جیلوں میں 255 مرد اور 2 خواتین ایچ آئی وی ایڈز کے مرض میں مبتلا ہیں۔ جب کہ سندھ میں 115 مرد اور ایک عورت کو یہ موذی مرض لاحق ہے۔خیبرپختون میں 39 جب کہ بلوچستان کی جیلوں میں 13 قیدی ایچ آئی وی ایڈز کے مرض میں مبتلا ہیں۔

رپورٹ کے مطابق ملک بھر کی جیلوں میں 65 فیصد قیدی سزا یافتہ نہیں، ان کے خلاف مختلف مقدمات زیرسماعت ہیں، پنجاب میں 55 فیصد، کے پی میں 71 فیصد، سندھ میں 70 اور بلوچستان میں 59 فیصد قیدیوں کے کیسز کا فیصلہ ہی نہیں ہوا، پنجاب کی جیلوں میں 290 مرد اور 8 عورتیں ذہنی مرض میں مبتلا ہیں، سندھ میں 50، کے پی میں 235 اور بلوچستان میں 11 قیدی ذہنی مریض ہیں۔

Comments are closed.