پاکستان میں اقلیتوں کے حوالے سےبھارتی پروپیگنڈہ مسترد،بھارتی ناظم الامور کی طلبی

اسلام آباد:پاکستان نے بھارت کی طرف سے انفرادی واقعات کو اقلیتوں کے حقوق سے جوڑنے کا بے بنیاد بھارتی پروپیگنڈہ مسترد کر دیا ہے، اسلام آباد میں بھارتی ناظم الامور کو دفتر خارجہ طلب کر کے سخت احتجاج ریکارڈ کرایا گیا۔

دفترخارجہ کی جانب سےجاری بیان میں بتایاگیاہےکہ پاکستان میں اقلیتوں کے حوالے سےبھارتی پروپیگنڈے پرڈی جی ساؤتھ ایشیا و سارک زاہد حفیظ چوہدری نے بھارتی ناظم الامور گورو آہلووالیا کو دفترخارجہ طلب کیا اور سخت احتجاج ریکارڈ کرایا اور واضح کیا کہ بھارت کی طرف سے انفرادی واقعات کو اقلیتوں کے حقوق سے جوڑنے کا بے بنیاد پروپیگنڈہ ناقابل قبول ہے۔

بھارتی سفارت کار پر واضح کیا گیا کہ مودی سرکار کی جانب سے مذموم کوششیں اور سازشیں بھارت کے اندر اقلیتوں سےناروا سلوک، متنازعہ شہریت قوانین جیسے امتیازی اقدامات اور اس پر عوامی ردعمل سے عالمی برادری کی توجہ ہٹا سکتی ہیں،ناں ہی ایسے ہتھکنڈوں سے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ریاستی دہشت گردی پر پردہ ڈالا جا سکتا ہے۔

ترجمان دفترخارجہ نے کہا ہے کہ پاکستان کے آئین کے مطابق اقلیتوں کو مکمل حقوق حاصل ہیں، پاکستانی قانون ملکی شہریوں کے حقوق کا تحفظ کرنے کی اہلیت رکھتا ہے،بھارتی حکام اقلیتوں کے حقوق کے حوالے سے ڈھونگ رچانے سے باز رہیں۔ مودی سرکاراپنے گھر کو درست کرتے ہوئے بھارت میں اقلیتوں کا تحفظ یقینی بنائےاور دوسرے ممالک کے معاملات پر سیاست کرنے سے اجتناب کرے۔

Comments are closed.