اسپین،امدادی رقم ERET ادائیگیوں میں تاخیر،ہزاروں خاندان مالی مشکلات کاشکار

اسپین، (مقامی ذرائع ابلاغ)کورونا وائرس سے پیداہونے والی صورتحال لاک ڈاون میں کاروبار بند ہوئے جس کے بعد حکومت کی جانب سے بے روزگار افراد کے لئے امداد ای آر ٹی ای (یا ہسپانوی میں ایکسپیڈینٹ ڈی ریگولیسن ٹیمورل ڈی ایمپلیو) شروع کی، اس امداد کے تحت حکومت بےروزگاروں کی مالی مددکرے گی جبکہ کمپنی ورکر کو کام سے نکال نہیں سکتی

لاک ڈاون کے بعد 5لاکھ سے زائد کمپنیوں نے اپنے ورکرز کے لئے اس فنڈکو اپلائی کیاجس کچھ افراد کو معاشی مدد ملی لیکن تاحال بہت سارے افراد امداد کے منتظر ہیں

وزیر محنت یولینڈا ڈیاز نے گذشتہ جمعہ کو بتایاتھاکہ سیپے نے 33 دنوں میں 3.3ملین بے روزگار افراد کو امداد فراہم کردی ہے یہ ادائیگیاں جلد کی جائیں گی انھوں نے کانگریس کو بتایا کہ ادائیگیوں میں تاخیر نہیں ہوگی

اسپین کی جنرل کونسل آف ایڈمنسٹریٹو گیسٹورس کی جانب سے بدھ کے روز شائع کردہ ایک سروے کے مطابق مئی کے وسط تک ای آر ٹی ای اسکیم میں 900،000 سے زیادہ کارکنوں کو اپنی بے روزگاری کی امداد نہیں ملی تھی

میڈرڈ ہاسپیٹلٹی ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ اس شعبے میں 40٪ کارکنوں کو ابھی تک کوئی ادائیگی نہیں ملی ہے۔

انڈیپینڈینٹ اینڈ سول سرونٹ یونین (CSIF) کے مطابق وزارت برائے مزدوری کے اعدادوشمار کے مطابق انکشاف کیا گیا ہے کہ 2019 کے مقابلہ میں ایس ای ای پی 530 فیصد زیادہ بے روزگار افراد کااضافہ ہواہے اگرچہ کام کا بوجھ تیزی سے بڑھ گیا ہے لیکن عملے کی تعداد میں صرف 10 فیصد اضافہ ہوا ہے

Leave A Reply

Your email address will not be published.