دسویں قومی مالیاتی کمیشن کی تشکیل کیخلاف کیس میں وفاقی حکومت سے جواب طلب

اسلام آباد: دسویں قومی مالیاتی کمیشن کی تشکیل کے خلاف پاکستان مسلم لیگ (ن) کی درخواست پر وفاقی حکومت سے جواب طلب کرلیاگیا۔

اسلام آباد ہائی کورٹ میں دسویں قومی مالیاتی کمیشن (این ایف سی) کی تشکیل کیخلاف سابق وفاقی وزیر اور مسلم لیگ (ن) کے رہنما خرم دستگیر کی درخواست پر سماعت ہوئی۔ رکن قومی اسمبلی خرم دستگیر کے وکیل محسن شاہ نواز رانجھا نے کہا کہ وزیر اعلی سندھ نے بھی این ایف سی تشکیل پر اعتراضات اٹھائے ہیں۔

دوران سماعت جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب نے ریمارکس دیے کہ مفروضوں پر نہ جائیں حقائق پر بات کریں اسمبلی کے فلور پر جو آپ حل نہیں کر پاتے وہ یہاں لے آتے ہیں۔ درخواستگزار کا کیس یہ ہونا چاہیے کہ مشیر خزانہ کو مشاورت سے رکن نہیں بنایا گیا۔ عدالت نے قرار دیا کہ حقائق کی روشنی میں اگر درخواست مسترد ہوئی درخواستگزار کو مثالی جرمانہ ہوگا۔

 محسن شاہ نواز رانجھا نے کہا کہ آئین کے مطابق واضع لکھا ہے کہ پاکستان کو منتخب نمائندے چلائیں گے۔ عدالت نے ابتدائی دلائل کے بعد وفاقی حکومت سمیت تمام فریقین کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کر لئے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.