مقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب بدلنے کی سازش۔۔بھارتی شہری کو ڈومیسائل جاری

غیر مقامی افراد کو جموں و کشمیر کا ڈومیسائل جاری کرنا عالمی قوانین کی خلاف ورزی ہے، پاکستان

سری نگر/ اسلام آباد: کشمیریوں کی تحریک آزادی کو طاقت اور ظلم کے ذریعے دبانے میں ناکامی پر عیار مودی سرکار نے مقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کی گھناونی سازش پر عملدرآمد شروع کرتے ہوئے پہلے بھارتی شہری کو کشمیر کا ڈومیسائل جاری کر دیا۔

 کشمیریوں کی تحریک آزادی کو دبانے میں مکمل ناکامی کے بعد بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کی گھناونی سازش پرعملدرآمد شروع کر دیا،انتہا پسند مودی سرکار نے پہلے بھارتی شہری کو کشمیر کا ڈومیسائل جاری کر دیا۔ پاکستان نے اقدام کی سخت مذمت کرتے ہوئے اسے اقوام متحدہ کی قراردادوں کی خلاف ورزی قرار دیا ہے

بھارتی حکومت نے مقبوضہ کشمیر میں ڈومیسائل اجراء کا آغاز سرکاری افسران سے کیا ہے اور ہندوستانی ایڈمنسٹریٹو سروس کے آفیسر نوین چوہدری کو مقبوضہ کشمیر کا پہلا ڈومیسائل جاری کر دیاگیا۔ ہندوستانی سرکاری آفیسر کا تعلق ریاست بہار سے ہے۔ نوین چوہدری کو 24 جون کو ضلع جموں کے گاؤں گاندھی نگر کے پتے پر ڈومیسائل کااجراء کیا گیا۔

پاکستانی دفتر خارجہ کی ترجمان عائشہ فاروقی نے سخت ردعمل کا اظہا رکرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت کی جانب سے غیر مقامی افراد کوریاست جموں و کشمیر کا ڈومیسائل جاری کرنا عالمی قوانین اور چوتھے جنیوا کنونشن کی بھی خلاف ورزی ہے ۔ عالمی برادری بھارت کو مقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب تبدیل کرنے سے روکے اور تمام غیر قانونی ڈومیسائل منسوخ کرنے کے لیے دباوڈالا جائے۔بھارتی اقدام کا مقصدمقبوضہ جموں کشمیر میں آبادی کا تناسب تبدیل کرکے کشمیریوں کے حق خود ارادیت پر اثر انداز ہونا ہے۔

واضح رہے کہ مودی سرکار کا ہر ہتھکنڈہ ناکام ہو چکا ہے اور قابض بھارتی فوج کا بدترین ظلم و بربریت بھی نہتے کشمیریوں کا جذبہ آزادی کم نہیں کر سکا، بھارت نے کشمیر میں ہر حربہ ناکام ہونے کے بعد نئی سازش رچا لیتا ہے، رواں ہفتے ہی مقبوضہ کشمیر میں غیر مقامی افراد کو راشن کارڈز فراہمی کا سلسلہ بھی شروع کیا گیا۔

4 Comments
  1. ปั้มไลค์ says

    Like!! Thank you for publishing this awesome article.

  2. These are actually great ideas in concerning blogging.

  3. เบอร์มงคล says

    I am regular visitor, how are you everybody? This article posted at this web site is in fact pleasant.

  4. SMS says

    Thanks so much for the blog post.

Leave A Reply

Your email address will not be published.