نواز شریف کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری، مفرور قراردینے کی کارروائی شروع

اسلام آباد ہائی کورٹ کی جانب سے بڑا فیصلہ سامنے آیا ہے، عدالت عالیہ نے العزیزیہ ریفرنس میں سابق وزیراعظم نواز شریف کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے،حاضری سے استثنیٰ کی درخواست بھی مسترد کر دی گئی۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل دو رکنی بینچ نے العزیزیہ ریفرنس میں نواز شریف کی حاضری استثنیٰ کی درخواست پر سماعت کی، سابق وزیراعظم کے وکیل خواجہ حارث اور نیب کے پراسیکیوٹر کے دلائل دیئے۔

عدالت نے فریقین کے دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ محفوظ کیا جسے کچھ دیر بعد سناتے ہوئے العزیزیہ ریفرنس میں نواز شریف کی حاضری سے استثنی،،، نمائندے کے ذریعے اپیلوں کی پیروی کرنے کی درخواستیں مسترد کردیں۔ عدالت نے مسلسل عدم حاضری پر سابق وزیراعظم کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے۔

Activity - Insert animated GIF to HTML

اسلام آباد ہائی کورٹ نے 22 ستمبر کے لئے وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے سابق وزیراعظم کو پیش کرنے کا حکم دیا ہے، جس کے بعد  سابق وزیراعظم نواز شریف کو مفرور قرار دینے کی کارروائی کا آغاز ہو گیا۔

Comments are closed.