آرمی چیف تقرر پر آپ کے ساتھ ہیں، اتحادیوں کا وزیراعظم پراعتماد

ہر فیصلے میں آپ کے ساتھ کھڑے ہیں،تقرری آپ کا آئینی حق ہے:زرداری، فضل الرحمان،خالد مقبول صدیقی، بلاول بھٹو اور دیگرکا وزیراعظم ہائوس میں اجلاس میں اظہار خیال

اسلام آباد : آرمی چیف تقرری پر سیاسی قیادت نے بھی سر جوڑ لئے۔

وزیراعظم ہائوس اسلام آباد میں اتحادی جماعتوں کا مشاورتی اجلاس ہوا۔آصف علی زرداری، مولانا فضل الرحمان، چوہدری شجاعت، ڈاکٹرخادل مگسی، بلاول بھٹو، خالد مقبول صدیقی، اسلم بھوتانی، محسن داوڑ،آفتاب شیرپائو، شاہ زین بگٹی اور شاہد خاقان عباسی نے شرکت کی۔

پارٹی سربراہان اور راہنمائوں نے وزیراعظم شہباز شریف کی بھرپور حمایت کی۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ میاں صاحب، ہم ہر فیصلے میں آپ کے ساتھ کھڑے ہیں۔چوہدری شجاعت بولے اللہ تعالی نے آپ کو عزت اور منصب سے نوازا ہے، اللہ تعالی کا شکر ادا کرتے ہیں، یہ آپ کا آئینی حق ہے اور ہم آپ کے ساتھ کھڑے ہیں۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم جو بھی فیصلہ کریں گے، جے یو آئی آپ کے ساتھ کھڑی ہے اور آپ کی تائید کرتی ہے۔خالد مگسی نے کہا کہ آپ جو فیصلہ کریں، ہم آپ کے ساتھ ڈٹ کر کھڑے ہیں۔

خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ آپ پر مکمل اعتماد ہے، آپ کا آئینی حق ہے، آپ نے ہم سے مشاورت کی، آپ کا شکریہ۔اسلم بھوتانی کا کہنا تھا کہ آئین کے تحت فیصلہ آپ کو کرنا ہے، ہم آپ کے فیصلے کی تائید کرتے ہیں۔

محسن داوڑ نے کہا کہ اہم تقرریوں کا اختیار آپ کے پاس ہے اور آپ ہی اس کے مجاز ہیں، ہم آپ کے ساتھ ہیں۔آفتاب شیرپائو کا کہنا تھا کہ اختیار آپ کا ہے، آپ نے ہم پر اعتماد کیا، ہم آپ پر مکمل اعتماد کرتے ہیں۔

شاہ زین بگٹی نے کہا کہ دستور نے آپ کو ذمہ داری دی ہے، ہم آپ کے فیصلوں کی تائید و حمایت کرتے ہیں، مشاورت کرنا آپ کی جمہوری سوچ کا مظہر ہے۔شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ تمام جماعتوں کا وزیراعظم شہباز شریف پر مکمل اعتماد ہمارے لئے باعث فخر ہے۔

دوسری جانب مولانا فضل الرحمان نے وزیراعظم شہباز شریف سے ملاقات بھی اور انہیں اپنی مکمل حمایت کا یقین دلایا۔

Comments are closed.