اداکارہ عتیقہ اوڈھو کو9 سال بعد شراب برآمدگی کیس سے باعزت بری کر دیا گیا

راولپنڈی: پاکستانی فلم و ٹیلی ویژن  کی اداکارہ عتیقہ اوڈھو کو نو سال بعد 2 بوتل شراب برآمدگی کے کیس میں باعزت بری کردیا گیا۔

راولپنڈی کی سول عدالت میں اداکارہ عتیقہ اوڈھو کے خلاف شراب برآمدگی کیس کی سماعت ہوئی۔ سول عدالت نے 9 سال 2 ماہ  اور 14 روز بعد فیصلہ سناتے ہوئے عتیقہ اوڈھو کو 2 بوتل شراب کیس میں باعزت بری کرنے کا فیصلہ سنایا۔عدالت نے قرار دیا کہ ملزمہ کے خلاف کوئی ثبوت نہیں۔

واضح رہے کہ کراچی جاتے ہوئے اسلام آباد ایئرپورٹ پر عتیقہ اوڈھو کے بیگ سے شراب کی 2 بوتلیں برآمد ہونے کا الزام تھا، جس پر سابق چیف جسٹس افتخار چوہدری کے سوموٹو  حکم پر 7 جون 2011 کو اداکارہ کے خلاف تھانہ ایئرپورٹ پولیس نے مقدمہ درج کیا تھا، اس مقدمہ میں 210 پیشیاں ہوئیں اور 16 جج تبدیل ہوئے۔

Activity - Insert animated GIF to HTML

راولپنڈی کی مقامی عدالت کی جانب سے فیصلہ آنے کے بعد اپنا ردعمل دیتے ہوئے اداکارہ عتیقہ اوڈھو نے کہا کہ دیر سے سہی لیکن بالآخر انصاف مل گیا۔

Comments are closed.